پاکستان میں مہنگائی جنوبی ایشیا میں سب سے زیادہ بلند سطح پر پہنچ گئی

ملک میں سالانہ بنیادوں پر مہنگائی تاریخ کی بلند ترین سطح 38 فیصد تک پہنچ گئی،یہ ملکی تاریخ کی بھی بلند ترین شرح ہے جبکہ جنوبی ایشیا میں بھی سب سے بلند سطح ہے۔

موقر قومی اخبار کی رپورٹ کے مطابق مئی میں مہنگائی تخمینے سے تقریبا 4 فیصد زیادہ رہی، تعلیم، صحت، بجلی، گیس اور ایندھن سمیت ہر چیز مہنگی ہوگئی۔

وفاقی ادارہ شماریات کے مطابق شہری علاقوں میں مہنگائی 35.1فیصد کی سطح پر ریکارڈ کی گئی جبکہ دیہی علاقوں میں مہنگائی 42.2فیصد کی بلند ترین سطح تک پہنچ گئی۔

وفاقی ادارہ شماریات کی جانب سے جاری مہنگائی کے اعداد و شمار کے مطابق قومی سطح پر ایک سال میں کھانے پینے کی اشیا 48.65فیصد جبکہ ٹرانسپورٹ کرائے 53فیصد مہنگے ہوگئے۔

ایف بی ایس کے مطابق تفریحی سہولیات گزشتہ سال کی نسبت 72فیصد مہنگی ہوئیں جبکہ ریسٹورنٹ اور ہوٹل چارجز میں بھی 42فیصد سے زیادہ اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

Scroll to Top